تارکین وطن کو شام سے لانے والی کشتی سمندر میں ڈوب گئی، 61 جاں بحق

23  ستمبر‬‮  2022

شام کے ساحلی علاقے کے نزدیک کشتی ڈوب جانے کی وجہ سے 61 تارکین وطن جاں بحق ہو گئے ہیں، جو ہمسایہ ملک لبنان سے روانہ ہوئے تھے۔

تفصیلات کے مطابق جمعے کی صبح کشتی ڈوبنے کے واقعے کے بعد شام کی وزارت صحت نے تصدیق کی ہے کہ اب تک جاں بحق ہونے والے کشتی سواروں کی تعداد 34 تک پہنچ چکی ہے۔ جبکہ 20 بچ جانے والے کشتی سواروں کو باسل ہسپتال میں علاج کی سہولتیں فراہم کی جاری ہیں۔

شامی وزارت صحت نے ابتدائی طور پر 15 افراد کی ہلاکت کی اطلاع دی تھی،  بعد ازاں یہ تعداد 28 بتائی گئی اور اب تک 61 ہو چکی ہے۔ سرکاری خبر رساں ادارے کا شامی بندرگاہ کے سربراہ سامر کبر اسلی کے حوالے سے کہنا ہے کہ یہ تارکین وطن کو لے جانے والی کشتی تھی جو حادثے کا شکار ہو گئی۔

بچ جانے والے کشتی سواروں کا کہنا ہے کہ یہ کشتی کئی روز قبل لبنان سے روانہ ہوئی تھی، مقامی ماہی گیروں نے ڈوبنے والی کشتی کے سوراوں کو بچانے کیلئے رضاکارانہ مدد کی ہے۔

واضح رہے کہ لبنان میں شام کی خانہ جنگی کی وجہ سے کم از کم دس لاکھ سے زائد مہاجرین پناہ لئے ہوئے ہیں، لیکن لبنان خود پچھلے تین سال سے مشکل معاشی صورت حال سے دوچار ہے۔ اس معاشی بد حالی کی وجہ سے یورپی یونین کے رکن ممالک کی طرف سے لوگوں کے نکلنے کی کوششوں میں اضافہ ہو گیا ہے۔

سب سے زیادہ مقبول خبریں


About Us   |    Contact Us   |    Privacy Policy

Copyright © 2021 Sabir Shakir. All Rights Reserved